زنا بالجبر، جمہور فقہا کا موقف اور ڈاکٹر مشتاق صاحب

زنا بالجبر کی حالیہ بحث کے تناظر میں ہمارا نقد، زنا بالجبر یا عصمت دری کے عمومی فقہی موقف پر تھا جو زنا بالرضا اور زنا بالجبر کو ایک ہی جرم تصور کرتا ہے، پھر اگر اس جرم کی فقہی (شرعی) نصاب شھادت (چار مرد عینی گواہ) میسر نہ ہوں تو اس مسئلے کو سیاستہ حل کرنا تجویز کرتا ہے۔

مكمل تحریر پڑھیںََ

زکوۃ، ایک تفہیم نو

از ڈاکٹر عرفان شہزاد وحی، خدا کی وہ عظیم نعمت ہے جو انسان اوراس کے سماج سے متعلق ایسے مستقل نوعیت کے معاملات میں متعین رہنمائی کرتی ہے جن کا کوئی معین حل نکالنا یا بالاتفاق کسی حتمی نتیجے تک پہنچنا عقلِ انسانی کے لیے ممکن نہیں ہوتا، اور اسی وجہ سے وہ محلِ نزاع و بحث بنے رہتے ہیں۔

مكمل تحریر پڑھیںََ

روزہ کے استطاعت کی بحث، فقھا اور غامدی صاحب

راقم: ڈاکٹر عرفان شہزاد روزہ رکھنے میں فرد کی استطاعت اور عدم استطاعت کی بحث کے پیچھے ایک خاص فقہی ذہن کار فرما ہے جس پر بات کرنا ضروری ہے۔ لمبے چوڑے اصولی مباحث کے پیچھے مسئلہ صرف دو نکاتی ہے: 1) روزہ رکھنے میں فرد کی استطاعت اور عدم استطاعت کی تعیین کے لیے معیار کیا ہو؟ 2) اس

مكمل تحریر پڑھیںََ

دین کے مقدمات سے ہی دینی احکام او نواہی کا اثبات اور نفی ہوتی ہے ۔

دین کے مقدمات سے ہی دینی احکام او نواہی کا اثبات اور نفی ہوتی ہے ۔ علم و عقل کا مسلمہ ہے کہ کسی امرکا اثبات یا نفی کو کسی منفی مقدمے پر قائم نہیں کیا جا سکتا۔ جہاں تک دین کے اوامر و نواہی اور ان کے اطلاقات کا تعلق ہے تو یہ بھی دین کے اپنے مقدمات پر

مكمل تحریر پڑھیںََ

خلافت کی ناگزیریت کی بحث (حصہ دوم)

محترم ڈاکٹر زاہد مغل کے جواب میں محترم جناب زاہد مغل صاحب نے خلافت کے قیام کے اثبات کے لیے اس کی ناگزیریت کے عنوان سے ایک مقدمہ قائم کیا، جس کے مطابق انسانوں کے درمیان حقوق و فرائض اور عدل و قسط کا قیام ایک ناگزیر تقاضا ہے، اس تقاضے کو پورا کرنے کے لیے جس قوت نافذہ کی

مكمل تحریر پڑھیںََ

خلافت کے اثبات میں ناگزیریت کی بحث

محترم ڈاکٹر زاہد مغل کے جواب میں راقم: ڈاکٹر عرفان شہزاد خلافت کی دینی حیثیت کے اثبات کے لیے ناگزیریت کے عنوان سے ہمارے دوست جناب ڈاکٹر زاہد مغل نے ایک مقدمہ قائم کیا ہے۔ اس کے مطابق انسانوں کے درمیان حقوق و فرائض اور عدل و قسط کا قیام ایک ناگزیر تقاضا ہے، اس تقاضے کو پورا کرنے کے

مكمل تحریر پڑھیںََ

اگر زینب زندہ ہوتی

ڈاکٹر مشتاق صاحب کے جواب میں ڈاکٹر مشتاق صاحب نے حسن الیاس صاحب کی پوسٹ کے جواب میں اپنی پوسٹ، “فقہ اور اصولِ فقہ کے متعلق جہلِ مرکب کا شاہ کار”، میں اصل مسئلہ کو ایڈریس ہی نہیں کیا اور دیگر باتوں میں الجھا کر فقہ کی اس پوزیشن کے نقائص سے توجہ ہٹانے کی سعی کی ہے جس کی

مكمل تحریر پڑھیںََ

محکوم اور مظلوم مسلم اقوام کے لیے قرآنی لائحہ عمل

حالتِ کمزوری، محکومی اور مظلومی میں مسلمانوں کے لیے قرآن کی کیا ہدایات ہیں، یہ وہ موضوع ہے جسے عصرِ حاضر میں تقریباً مکمل طور پر نظر انداز کر دیا گیا ہے۔ اپنے سے کئی گنا طاقت ور مقابل کو للکارنا، جدید ٹیکنالوجی کی محیّر العقول طاقتوں سے لیس دشمن کو اپنے فرسودہ ہتھیاروں سے تباہ کرنے کے عزم کا

مكمل تحریر پڑھیںََ

حالتِ مظلومیت کا قرآنی ضابطہ

حالتِ کمزوری، محکومی اور مظلومی میں مسلمانوں کے لیے قرآن مجید ہماری کیا رہنمائی کرتا ہے؟ یہ وہ موضوع ہے جسے عصرِ حاضر میں تقریباً مکمل طور پر نظر انداز کر دیا گیا ہے۔کمزور اور مظلوم مسلم اقوام میں اپنے سے کئی گنا طاقت ور مقابل کو للکارنا، جدید ٹیکنالوجی کی محیّر العقول طاقتوں سے لیس دشمن کو اپنے کم

مكمل تحریر پڑھیںََ